وکست بھارت سنکلپ یاترا میں خواتین کلیدی شراکت دار ہیں

وکست بھارت سنکلپ یاترا میں خواتین کلیدی شراکت دار ہیں
نئی دہلی:وزیر اعظم نریندر مودی نے آج ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے وکست بھارت سنکلپ یاترا کے استفادہ کنندگان سے بات چیت کی انہوں نے پردھان منتری مہیلا کسان ڈرون کیندر بھی شروع کیا پروگرام کے دوران وزیر اعظم نے ایمس، دیوگھر میں تاریخی 10,000 ویں جن اوشدھی کیندر کو وقف کیا مزید برآں، مسٹر مودی نے ملک میں جن اوشدھی کیندروں کی تعداد 10,000 سے بڑھا کر 25,000 کرنے کا پروگرام بھی شروع کیا۔ وزیر اعظم نے اس سال کے شروع میں یوم آزادی کی تقریر کے دوران خواتین کے SHGs کو ڈرون فراہم کرنے اور جن اوشدھی کیندروں کی تعداد کو 10,000 سے بڑھا کر 25,000 کرنے کے لیے ان دونوں اقدامات کا اعلان کیا۔ یہ پروگرام ان وعدوں کی تکمیل کی نشان دہی کرتا ہے۔
اس موقع پر آندھرا پردیش کے پرکاسم ضلع سے ایک سیلف ہیلپ گروپ کی رکن کوملا پتی وینکٹا راونما نے زرعی مقاصد کے لیے ڈرون اڑانا سیکھنے کا اپنا تجربہ شیئر کیا۔ انہوں نے وزیراعظم کو بتایا کہ انہیں ڈرون اڑانے کی تربیت مکمل کرنے میں 12 دن لگے۔

دیہات میں زراعت کے لیے ڈرون کے استعمال کے اثرات کے بارے میں وزیر اعظم کے دریافت کرنے پر محترمہ وینکٹا نے بتایا کہ پانی کے مسائل سے نمٹنے میں مدد کرتا ہے اور وقت کی بچت بھی کرتا ہے۔ وزیر اعظم نے زور دے کر کہا کہ محترمہ وینکٹا جیسی خواتین ان لوگوں کے لیے ایک مثال ہیں جو ہندوستان کی خواتین کی طاقت پر شک کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ زراعت میں ڈرون کا استعمال مستقبل قریب میں خواتین کو بااختیار بنانے کی علامت بن کر ابھرے گا۔ انہوں نے وکست بھارت سنکلپ یاترا میں خواتین کی شرکت کی اہمیت پر بھی زور دیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.