کورونا سے متاثر فاروق عبداللہ ہسپتال سے رخصت

کورونا سے متاثر فاروق عبداللہ ہسپتال سے رخصت

سری نگر/نیشنل کانفرنس کے صدر و رکن پارلیمان ڈاکٹر فاروق عبداللہ کو سری نگر کے شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (سکمز) سے رخصت کیا گیا ہے۔تاہم ان کا کورونا ٹیسٹ ایک بار پھر مثبت آیا ہے۔

فاروق عبداللہ کے فرزند عمر عبداللہ نے بدھ کی شام اپنے ایک ٹویٹ میں کہا: ‘کورونا سے متاثر ہو جانے کے بعد سکمز میں داخل کئے جانے والے میرے والد کو آج شام پانچ دنوں کے بعد ہسپتال ھٰذا سے رخصت کیا گیا ہے۔ وہ روبہ صحت ہونے کے لئے اپنے گھر میں ہی آرام کریں گے۔ میرا ولد اور میرا خاندان انسٹی ٹیوٹ کے ڈاکٹرز، نرسنگ سٹاف اور دیگر افراد کا ممنون و مشکور ہے’۔

ان کا ایک اور ٹویٹ میں کہنا تھا: ‘ڈاکٹروں نے میرے والد کو ہدایت دی ہے کہ وہ وہ اپنی صحت یابی پر دھیان دیں۔ وہ روبہ صحت ہونے تک کسی سے مل نہیں پائیں گے۔ وہ روبہ صحت ہوتے ہی اپنا معمول کا کام بحال کریں گے’۔دوسری جانب سرکاری ذرائع نے بتایا کہ فاروق عبداللہ کا کورونا ٹیسٹ ایک بار پھر مثبت آیا ہے۔

موصوف کا 30 مارچ کو کورونا ٹیسٹ مثبت آیا تھا جس کے چند روز بعد انہیں 3 اپریل کو سکمز میں بہتر نگہداشت کے لئے داخل کیا گیا تھا۔فاروق عبداللہ کے پہلی بار کورونا مثبت آنے کی اطلاع عمر عبداللہ نے اپنے آفیشل ٹویٹر ہینڈل پر دی تھی۔

پچاسی سالہ فاروق عبداللہ نے رواں ماہ کی 2 تاریخ کو کورونا وائرس سے بچائو کی ویکسین لگوائی تھی۔ ہر فرد کو کچھ ہفتوں کے فاصلے سے ویکسین کی دو خوراکیں دی جاتی ہیں اور فاروق عبداللہ کو ابھی تک صرف ایک خوراک دی گئی تھی۔

دریں اثنا عمر عبداللہ نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا کہ فاروق عبداللہ صحت یاب ہو رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کورونا میں مبتلا مریضوں کا ٹیسٹ دوبارہ مثبت آنا کوئی خلاف معمول بات نہیں ہے۔

ان کا ٹویٹ میں کہنا تھا: ‘یہ کوئی خلاف معمول بات نہیں ہے۔ کورونا میں مبتلا مریضوں کا اکثر کئی دنوں تک ٹیسٹ مثبت آتا ہے۔ اہم بات یہ ہے کہ وہ (ڈاکٹر فاروق عبداللہ) صحت یاب ہو رہے ہیں اور انہیں اضافی آکسیجن سپورٹ کی ضرورت نہیں پڑتی ہے’۔

دوسری جانب جموں و کشمیر میں نیشنل کانفرنس کے لیڈروں اور کارکنوں کی طرف سے ڈاکٹر فاروق عبداللہ کی فوری صحت یابی کے لئے دعائیہ مجالس کا اہتمام کیا جا رہا ہے۔

یو این آئی

Leave a Reply

Your email address will not be published.