جموں وکشمیر میں ملی ٹنسی کے خلاف جنگ ابھی پوری طرح سے ختم نہیں ہوئی ہے:آر آر سوین

جموں وکشمیر میں ملی ٹنسی کے خلاف جنگ ابھی پوری طرح سے ختم نہیں ہوئی ہے:آر آر سوین

سری نگر: جموں و کشمیر کے ڈائریکٹر جنرل آف پولیس (ڈی جی پی) آر آر سوین کا کہنا ہے کہ جموں وکشمیر میں ملی ٹنسی کے خلاف جنگ ابھی ختم نہیں ہوئی ہے۔
انہوں نے کہا کہ یہ جنگ تب ہی ختم ہوگی جب ایک طرف مان جائے کہ یہ کہیں نہیں پہنچی گی۔
ان کا ساتھ ہی کہنا تھا: ‘ہماری دہشت گردی کے خلاف جنگ جاری رہے گی گر چہ ہمیں کبھی کبھی نقصان اٹھانا پڑتا ہے’۔
موصوف ڈی جی پی نے ان باتوں کا اظہار پر کے روز یہاں گرد وارا چھٹی پادشاہی میں منعقدہ ایک تقریب کے حاشیئے پر نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرنے کے دوران کیا۔
انہوں نے کہا: ‘دہشت گردی کے خلاف جنگ ابھی ختم نہیں ہوئی ہے یہ جنگ تب ہی ختم ہوگی جب ایک طرف مان جائے کہ یہ کہیں نہیں پہنچی گی’۔
ان کا کہنا تھا: ”ہماری دہشت گردی کے خلاف جنگ جاری رہے گی خواہ ہمیں کبھی کبھی نقصان اٹھانا پڑتا ہے’۔
مسٹر سوین نے کہا کہ پولیس اس جنگ میں پیچھے نہیں ہٹی گی۔
انہوں نے کہا: پولیس کا پیچھے ہٹنے کا سوال ہی نہیں ہے یہ بات صحیح ہے کہ اس میں نقصان ہوتا ہے لیکن ہماری کوشش یہ ہے کہ عوام کو کم سے کم نقصان پہنچے’۔
در اندازی کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ در اندازی کہیں کم ہوتی ہے کہیں زیادہ ہوتی ہے’۔
گرو نانک دیو جی کو شاندار خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے پولیس سربراہ نے کہا کہ اس مقدس موقع پر پولیس نے لوگوں کی خدمت کرنے کے عزم کا اعادہ کیا۔
انہوں نے کہا: ‘گرو نانک جی کی مساوات، بھائی چارے اور ہمدردی کی تعلیمات آج کے دور میں بھی انتہائی اہمیت کی حامل ہیں اور ہمیں اپنے آپ کو ان تعلیمات کے لئے دوارہ وقف کرنا چاہئے’۔

یو این آئی

Leave a Reply

Your email address will not be published.