اسرائیل میں حماس کے حملے میں مرنے والوں کی تعداد 700 ہوئی

اسرائیل میں حماس کے حملے میں مرنے والوں کی تعداد 700 ہوئی
یروشلم: اسرائیل اور فلسطین کے درمیان تنازع کے دوسرے دن حماس کے حملے میں ہلاک ہونے والے اسرائیلیوں کی تعداد بڑھ کر 700 ہو گئی جب کہ غزہ پٹی میں سینکڑوں دیگر افراد کے مارے جانے کی اطلاع ہے۔ اسرائیلی میڈیا نے اتوار کی شب یہ اطلاع دی۔
اسرائیل کے سرکاری نشریاتی ادارے کان ٹی وی نے سرکاری افسران کے حوالے سے اطلاع دی ہے کہ حماس کے حملے میں کم از کم 700 افراد مارے گئے، جب کہ اسلامی گروپ کے جنگجوؤں نے حفاظتی باڑ توڑ کر قریبی آبادیوں پر حملہ کیا، جس میں بہت سے لوگ مارے گئے۔ فوجیوں کو قید کر لیا گیا۔ اس کے ساتھ ہی غزہ کے شدت پسندوں نے جنوبی اور وسطی اسرائیل پر تقریباً 3000 راکٹ داغے۔

اتوار کی رات اسرائیل کی وزارت صحت نے اسرائیلی ہسپتالوں میں زخمیوں کی تعداد کے بارے میں ایک اپ ڈیٹ جاری کرتے ہوئے کہا کہ کم از کم 2,243 زخمی ہیں جن میں سے 22 کی حالت نازک ہے۔

اسرائیلی افواج نے ابھی تک جنوبی اسرائیل کا مکمل کنٹرول حاصل نہیں کیا ہے اور حماس کے عسکریت پسند غزہ کے قریب متعدد علاقوں میں اسرائیلی فوجیوں کے ساتھ گولی باری کر رہے ہیں۔ آئی ڈی ایف ہوم فرنٹ کمانڈ نے جنوب میں لوگوں سے کہا ہے کہ وہ اپنے گھروں میں رہیں۔

اس دوران غزہ میں فلسطینی وزارت صحت نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ غزہ میں اسرائیلی فضائی حملوں میں کم از کم 370 فلسطینی کی موت ہوئی اور 2200 دیگر زخمی ہوئے ہیں۔

یو این آئی

Leave a Reply

Your email address will not be published.