آدھار سے منسلک پیدائشی رجسٹریشن کو جموںوکشمیر میں مکمل طور پر عملایا جائے گا۔ پرنسپل سیکرٹری ہیلتھ

آدھار سے منسلک پیدائشی رجسٹریشن کو جموںوکشمیر میں مکمل طور پر عملایا جائے گا۔ پرنسپل سیکرٹری ہیلتھ

سری نگر:پرنسپل سیکرٹری صحت و طبی تعلیم منو ج کمار دِویدی اور یونیک آئید ینٹی فکیشن اَتھارٹی اِنڈیا ( یو آئی ڈی اے آئی )کے ڈپٹی ڈائریکٹر جنرل بھاونا گرگ نے آج یہاں سول سیکرٹریٹ میںجموں و کشمیر میں سول رجسٹریشن سسٹم (سی آر ایس) کے ذریعے ہسپتالوں میں آدھار سے منسلک پیدائشی رجسٹریشن (اے ایل بی آر) کے مسائل پر تبادلہ خیال کرنے کے لئے مشترکہ میٹنگ کی صدارت کی۔
میٹنگ میں کمشنر سیکرٹری اِنفارمیشن ٹیکنالوجی ڈیپارٹمنٹ ، پرنسپل جی ایم سی سری نگر ، پروجیکٹ منیجر یو آئی ڈی اے آئی سری نگر ، ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز کشمیر ، ڈائریکٹر سنسس آپریشنز جموںوکشمیر ، ڈائریکٹرجنرل اِکنامکس اینڈسٹیٹسٹکس جموںوکشمیر ،ڈائریکٹر جنرل خاندانی بہبود نے شرکت کی جبکہ ایم سی ایچ اینڈ امیونائزیشن ، ایڈیشنل سیکرٹری صحت و طبی تعلیم ، او ایس دی ہیلتھ اینڈ میڈیکل ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ ، پرنسپل جی ایم سی جموں ، اننت ناگ ، بارہمولہ ، راجوری ، ڈوڈہ اور کٹھوعہ ، ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز جموں اور دیگر اَفسران نے بذریعہ وڈیو کانفرنسنگ میٹنگ میں حصہ لیا۔
اِس موقعہ پر پرنسپل سیکرٹری نے متعلقہ اَفسران کو ہدایت دی کہ وہ جموںوکشمیر میں آدھار سے منسلک پیدائشی رجسٹریشن ( اے ایل بی آر ) اور سول رجسٹریشن سسٹم ( سی آر ایس )کے مکمل عمل آوری کے لئے مربوط کوششیں کریں۔
اُنہوں نے پروگرام کے کامیاب عمل آوری کے لئے تمام ٹیکنیکل فارملٹیز کو مکمل کرنے پر زور دیا اوراُنہوں نے اُنہیں ہدایت دی کہ وہ پورٹل کو جلد اَز جلد جموں وکشمیر میں دستیاب اور قابل رَسائی بنانے کے لئے رجسٹرار جنرل آف اِنڈیا کے ساتھ کیس کی پیروی کریں۔
اُنہوں نے عملے کی تربیت ، رجسٹرار آف برتھ کی ایمپنلمنٹ ،ضروری آلات کی خریداری اور اِس کام کے لئے تربیت یافتہ عملے کی شناخت جیسے جزوی پروگراموں کی صورتحال اور پیش رفت کے بارے میں معلومات فراہم کیں۔
اُنہوں نے اَفسران کو مشورہ دیا کہ وہ اَفرادی قوت کو تربیت دینا شروع کریں تاکہ یہ پورا عمل جموںوکشمیر میں مقررہ وقت کے اَندر مکمل طو رپر کام کرسکے۔اُنہوں نے اَفسران کو ہدایت دی کہ وہ اِس بات کو یقینی بنائیں کہ مطلوبہ بنیادی ڈھانچہ قائم کیا جائے اور کسی بھی خلا¿ کو یوآئی ڈی اے آئی کے سامنے پیش کیا جائے ۔اُنہوں نے اَفسران کو اِس سکیم کے تحت تمام متعلقہ ہسپتالوں ، ضلع ہسپتالوں ، سی ایچ سیز ، پی ایچ سیز او رنجی ہسپتالوں کا احاطہ کرنے کی بھی ہدایت دی۔

دورانِ میٹنگ ڈپٹی ڈائریکٹر جنرل یونیک آئیڈ ینٹی فکیشن اَتھارٹی آف اِنڈیا نے اے ایل بی آر اور سی آر ایس کے عمل اور فوائد کے بارے میںجانکاری دیتے ہوئے کہا کہ یہ پروگرام جلد ہی نوزائیدہ بچوں کو منفرد شناخت فراہم کریں گے ۔
اُنہوں نے وضاحت کی کہ آدھار سے منسلک پیدائشی رجسٹریشن ( اے ایل بی آر ) ہے اور اس کاسول رجسٹریشن سسٹم ( سی آر ایس )کے قومی پلیٹ فارم کے ساتھ مربوط سے پیدائش کے اِندراج کے عمل کو فوری اور بغیر پریشانی ہوجائے گا۔
میٹنگ میں اِس عمل کو مو¿ثر بنانے کے طریقوں پر غور ہوا او ربالعموم استعمال ہونے والے تمام دیلیوری پوائنٹس کی نشاندہی کر کے زیادہ سے زیادہ فوائد حاصل کرنے کے بارے میں تبادلہ خیال کیا گیا ۔اِس نے یہاں سی آر ایس کے بہتر اور تیزی سے عمل آوری پر بھی تبادلہ خیال کیا جو آخر کار اِس پروگرام کو کامیابی کے ساتھ نافذ کرنے پر مدد کرے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.