تمل ناڈو :وکراونڈی اسمبلی ضمنی انتخاب کی تیاریاں مکمل

تمل ناڈو :وکراونڈی اسمبلی ضمنی انتخاب کی تیاریاں مکمل

چنئی، :  تمل ناڈو کی وکراونڈی سیٹ پر منگل کو ہونے والے اسمبلی ضمنی انتخاب کے لیے ووٹنگ کی تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں۔حکمراں ڈی ایم کے اور پی ایم کے کے درمیان قریبی مقابلہ متوقع ہے، حالانکہ اس ضمنی انتخاب میں سہ رخی مقابلہ ہوگا، جس میں این ٹی کے دوسری پارٹی ہوگی۔

ووٹنگ بدھ کو صبح 7 بجے سے شام 6 بجے تک ہوگی۔ الیکشن کمیشن نے آزادانہ اور منصفانہ ووٹنگ کو یقینی بنانے کے لیے وافر تعداد میں پولیس اہلکار کے ساتھ سکیورٹی کے لئے مرکزی نیم فوجی دستوں کو تعینات کیا گیا ہے۔

276 بوتھوں پر ووٹنگ ہوگی جن میں سے 44 کو حساس قرار دیا گیا ہے اور ان بوتھوں پر اضافی سیکورٹی تعینات کی جائے گی۔
الیکشن کمیشن نے انتخابی عمل کی لائیو ویب کاسٹنگ کا انتظام کیا ہے اور ضمنی انتخاب میں 1000 سے زائد ای وی ایمز کا استعمال کیا جائے گا، جنہیں کل صبح انتہائی سیکیورٹی والے اسٹرانگ رومز سے پولنگ اسٹیشنوں تک پہنچایا جائے گا۔

ووٹوں کی گنتی 13 جولائی کو ہوگی اور انتخابی عمل 15 جولائی کو مکمل ہوگا۔ ضمنی انتخاب کو ذہن میں رکھتے ہوئے، ضلع انتظامیہ نے پورے ولوپورم ضلع میں 8 سے 10 جولائی اور 13 جولائی (گنتی کا دن) تین دن کے لیے ڈرائی ڈے کا اعلان کیا ہے۔

ان سیٹوں پر حکمران ڈی ایم کے، پی ایم کے اور این ٹی کے سمیت کل 29 امیدوار میدان میں ہیں۔ انتخابات میں حکمراں ڈی ایم کے زیرقیادت محاذ، بی جے پی کی زیرقیادت اتحاد اور این ٹی کے کے درمیان سہ رخی مقابلہ دیکھنے کو ملے گا، کیونکہ اہم اپوزیشن اے آئی اے ڈی ایم کے اور اس کی اتحادی ڈی ایم ڈی کے نے انتخابات کا بائیکاٹ کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور الزام عائد کیا ہے کہ انتخابات آزادانہ اور منصفانہ طریقے سے نہیں ہوں گے۔

اصل مقابلہ ڈی ایم کے کے اینیور سیوا اور بی جے پی کی اتحادی پی ایم کے امیدوار سی انبومانی کے درمیان ہوگا۔ این ٹی کے کی ڈاکٹر انورادھا میدان میں دوسری اہم امیدوار ہیں، جبکہ باقی آزاد امیدوار ہیں۔ڈی ایم کے کے مضبوط گڑھ ولوپورم ضلع میں وکراونڈی سیٹ پر ضمنی انتخاب ڈی ایم کے کے موجودہ ایم ایل اے این پگاجھینڈی کی موت کے بعد کرایا جا رہا ہے، جو ضلع میں پارٹی کے ایک سینئر کارکن بھی تھے۔تمل ناڈو کے وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے صدر ایم کے اسٹالن کا اپریل میں انتخابی مہم کی ریلی سے خطاب کرنے کے بعد صحت کی خرابی کے باعث انتقال ہوگیا۔

یو این آئی

Leave a Reply

Your email address will not be published.