در اندازی کی کوششوں کو کامیاب نہیں ہونے دیا جا رہا ہے:ڈائریکٹر جنرل بی ایس ایف

در اندازی کی کوششوں کو کامیاب نہیں ہونے دیا جا رہا ہے:ڈائریکٹر جنرل بی ایس ایف

سری نگر: بارڈر سیکورٹی فورس (بی ایس ایف)کے ڈائریکٹر جنرل نتن اگروال کا کہنا ہے کہ جموں وکشمیر کے سرحدوں پر در اندازی کی کوششوں کو ناکام بنایا جا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ پچھلے دو ہفتوں سے پاکستان کی طرف سے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی ہو رہی ہے جن کی وجوہات کو معلوم کیا جا رہا ہے۔

موصوف ڈائریکٹر جنرل نے ان باتوں کا اظہار جمعرات کو ہمہامہ میں واقع بی ایس ایف کے سبسڈری ٹریننگ سینٹر میں منعقدہ ریکروٹس کی پاسنگ آﺅٹ پریڈ کے حاشئے پر نامہ نگاروں کے سوالوں کے جواب دینے کے دوران کیا۔انہوں نے کہا: ‘ہر سال برف باری ہونے سے پہلے سرحد پار سے در اندازی کی کوششیں کی جاتی ہیں لیکن ہمارے جوان چوکنا ہیں جو ہر کوشش کو ناکام بنا دیتے ہیں’۔بین الاقوامی سرحد پر پاکستان کی طرف سے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کے بارے میں پوچھے جانے پر ان کا کہنا تھا: ‘دو ہفتوں سے ایسا ہو رہا ہے وجوہات معلوم کی جا رہی ہیں اور اس سلسلے میں بات چیت جاری ہے۔

‘انہوں نے کہا کہ دو تین بار ہمارے جوانوں کو نشانہ بناکر حملے کئے گئے جن کا وہاں تعینات ہمارے جوانوں نے بھی بھر پور جواب دیا۔مسٹر نتن اگر وال نے کہا کہ سرحد پر باریک بینی سے نظر گذر رکھی جا رہی ہے اور سرحد پار والوں کے ارداوں کو کامیاب نہیں ہونے دیا جا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ بارڈر پر کوئی بڑی ہلچل نظر نہیں آرہی ہے۔سانبہ سیکٹر میں پاکستانی فائرنگ کے نتیجے میں فصل نہ کاٹنے کے بارے میں پوچھے جانے پر ان کا کہنا تھا: ‘میں بھی سانبہ گیا تھا،کچھ جگہوں پر فصل نہیں کٹی ہے لیکن مشینوں کا لایا جا رہا ہے اور کچھ علاقوں میں ہاتھوں سے فصل کاٹا جا رہا ہے’۔

یواین آئی

Leave a Reply

Your email address will not be published.