ملی ٹنسی کو جڑ سے اکھاڑنے تک آرام نہیں کریں گے: منوج سنہا

ملی ٹنسی کو جڑ سے اکھاڑنے تک آرام نہیں کریں گے: منوج سنہا

سری نگر/ جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کا کہنا ہے کہ عام شہریوں اور اقلیتی فرقے کے لوگوں کے قتل میں ملوث لوگوں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ملی ٹنسی کی جڑوں کو جموں و کشمیر کی سرزمین سے اکھاڑنے آرام نہیں کیا جائے گا۔ان کا ہمسایہ ملک کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہنا تھا کہ جو بھی جموں وکشمیر میں امن کو خراب کرنے کی کوشش کرے گا اس کے ساتھ سختی سے نمٹا جائے گا۔

موصوف لیفٹیننٹ گورنر نے ان باتوں کا اظہار جمعرات کو یہاں آرمڈ پولیس کمپلیکس زیون میں پولیس یاد گار دن کے موقع پر منعقدہ ایک تقریب سے اپنے خطاب کے دوران کیا۔

انہوں نے کہا: ’پولیس اور دوسرے سیکورٹی فورسز امن کی فضا کے قیام کے لئے قابل ستائش کام کر رہے ہیں چاہئے وہ کورونا وبا کے خلاف لڑائی ہو، کورونا گائیڈ لائنز پر عمل در آمد کو یقینی بنانا ہو، امن و قانون کے قیام کو ممکن بنانا ہو یا ملی ٹنسی کے خلاف مقابلہ کرنا ہو، پولیس پہلی صف میں کھڑا ہوتی ہے‘۔

ان کا کہنا تھا: ’جموں و کشمیر پولیس یونین ٹریٹری میں ہی نہیں بلکہ ملک بھر میں اپنی صلاحیتوں کے باعث مشہور ہے‘۔
انہوں نے کہا: ’ذمہ داری کا دوسرا نام جموں وکشمیر پولیس ہے‘۔

مسٹر سنہا نے کہا کہ عام شہریوں اور اقلیتی فرقے کے لوگوں کے قاتل امن کے دشمن ہیں اور انہیں ان بہیمانہ حرکات کی قیمت چکانا پڑے گی۔

انہوں نے کہا: ’انتظامیہ اور پولیس کسی بھی طاقت کو جموں و کشمیر کے بھائی چارے کی روایت کو نقصان پہنچانے کی اجازت نہیں دے گی‘۔

ان کا کہنا تھا: ’عام شہریوں اور اقلیتی فرقے کے لوگوں کے قتل میں ملوث افراد کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا‘۔


یو این آئی

Leave a Reply

Your email address will not be published.