سری نگر – جموں قومی شاہراہ پر ٹریفک بحال، 30 اکتوبر تک موسم خشک رہنے کا امکان

سری نگر – جموں قومی شاہراہ پر ٹریفک بحال، 30 اکتوبر تک موسم خشک رہنے کا امکان

سری نگر: وادی کشمیر کو ملک کے دوسرے حصوں کے ساتھ جوڑنے والی سری نگر – جموں قومی شاہراہ پر پیر کی صبح ایک روز بعد ٹریفک کی نقل و حمل بحال کر دی گئی۔
تاہم جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیاں کو صوبہ جموں کے راجوری اور پونچھ اضلاع کے ساتھ جوڑنے والے تاریخی مغل روڈ پر ٹریفک ہنوز بند ہے۔
بتادیں کہ سری نگر- جموں قومی شاہراہ اتوارکے روز مرمتی کام کے پیش نظر ٹریفک کے لئے بند تھی۔
ٹریفک حکام کی طرف سے جاری ایک ایڈوائزری میں کہا گیا تھا کہ سری نگر –جموں قومی شاہراہ پر دلواس کے مقام پر اہم مرمتی کام کے پیش نظر 22 اکتوبر یعنی اتوار کے روز ٹریفک کی نقل وحمل بند رہے گی۔
متعلقہ حکام نے پیر کی صبح ‘ایکس’ پر ایک پوسٹ میں کہا کہ سری نگر- جموں قومی شاہراہ پر ٹریفک کی نقل وحمل بحال کر دی گئی ہے تاہم مغل روڈ پھسلن کے باعث ہنوز بند ہے۔
انہوں نے کہا کہ قومی شاہراہ پر پیر کی صبح ٹریفک کی نقل و حمل بحال کر دی گئی اور پہلے درماندہ گاڑیوں کو اپنے اپنے منزلوں کی طرف جانے کی اجازت دی گئی۔
ڈرائیور حضرات سے نظم و نسق کا پابند رہنے کی تاکید کی گئی ہے۔
دریں اثنا محکمہ موسمیات نے وادی کشمیر میں 30 اکتوبر تک موسم خشک رہنے کی پیش گوئی کی ہے۔
متعلقہ محکمے کے ایک ترجمان نے بتایا کہ وادی میں 23 اکتوبر کو موسم جزوی ابر آلود رہنے کا امکان ہے۔
انہوں نے کہا کہ بعد ازاں وادی میں 24 سے 30 اکتوبر موسم جزوی ابر آلود مگر خشک رہنے کی توقع ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ اس دوران وادی کے میدانی علاقوں میں صبح کے وقت روشنی میں کمی ہوسکتی ہے۔
موصوف ترجمان نے بتایا کہ ماہ رواں کے اختتام تک وادی میں وسیع پیمانے پر موسم خراب ہونے کا کوئی امکان نہیں ہے۔
انہوں نے کہا کہ اس دوران موسم فصل کٹائی و دیگر آئوٹ ڈور سرگرمیوں کے لئے موزوں ہے۔

یو این آئی

Leave a Reply

Your email address will not be published.