اینٹی کرپشن بیورو نے رینج آفیسر کوکر ناگ اور فاریسٹ گارڈ کو رنگے ہاتھوں گرفتار کیا

اینٹی کرپشن بیورو نے رینج آفیسر کوکر ناگ اور فاریسٹ گارڈ کو رنگے ہاتھوں گرفتار کیا
سری نگر، 30جون: اینٹی کرپشن بیورو (اے سی بی ) نے رینج آفیسر اور فاریسٹ گارڈ کوکر ناگ کو دس ہزار روپیہ کی رشوت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں دھر دبوچ کر سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا۔

اے سی بی کے ایک ترجمان نے بتایا کہ اینٹی کرپشن بیورو کو تحریری طورپر شکایت موصول ہوئی کہ رینج آفیسر کوکر ناگ سہیل یونس شکار ی نے فاریسٹ گارڈ غلام محمد کے ذریعے شکایت کنندہ سے رہائشی مکان کی تعمیر کے لئے لکڑی (کائرو) کے حصول کی خاطر 22ہزار روپیہ رشوت کا تقاضہ کر رہا ہے۔
انہوں نے بتایا کہ شکایت کنندہ نے دس ہزار روپیہ کا انتظام کیا اور اس سلسلے میں اینٹی کرپشن بیورو سے قانونی کارروائی کے لئے بھی رجوع کیا۔
اُن کے مطابق شکایت موصول ہوتے ہی اینٹی کرپشن بیورو نے رینج آفیسر اور فاریسٹ گارڈ کوکر ناگ کے خلاف ایف آئی آر زیر نمبر 10/2022کے تحت کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی
اے سی بی ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ رشوت خور رینج آفیسر اور فاریسٹ گارڈ کو پکڑنے کی خاطر اینٹی کرپشن بیورو نے ایک جال بچھایا جس دوران فاریسٹ گارڈ غلام محمد نائیکو کو شکایت کنندہ سے دس ہزار روپیہ کی رشو ت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں دھر دبوچ کر سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا۔
اُن کے مطابق آزاد گواہوں کی موجودگی میں فاریسٹ گارڈ کے قبضے سے رشوت کی رقم برآمد کرکے ضبط کی گئی۔
انہوں نے کہاکہ رینج آفیسر کوکر ناگ سہیل یونس شکاری کو بھی بعد میں گرفتار کیا گیا۔
اس سلسلے میں مزید تحقیقات شروع کی گئی ہے۔

یو این آئی

Leave a Reply

Your email address will not be published.