زبان اور ثقافت کا تحفظ اور فروغ سب کی مشترکہ ذمہ داری ہے

زبان اور ثقافت کا تحفظ اور فروغ سب کی مشترکہ ذمہ داری ہے

انجمن ادب و ثقافت لولاب کا تفصیلی لایحہ عمل مرتب؛سال بھر پر مشتمل پروگرام کا آغاز

لولاب/انجمن ادب و ثقافت لولاب کے زیر اہتمام آج یہاں ایک شاندار محفل کا انعقاد کیا گیا جس میں انجمن کے ممبران کے علاوہ چند زی عزت شہریوں نے شرکت کی ۔ اس موقع پر مقررین نے زبان اور تہذیب وتمدن کو قوموں کی انمول میراث قرار دیتے ہوئے ادیبوں اور ادب نوازوں کو تلقین کی کہ وہ اس اہم معاملے میں اپنی پوزیشن اور مقدور کے مطابق اپنا بھر پور تعاون دستیاب رکھیں ۔ مقررین نے جموں وکشمیر کی واحد سرگرم اور فعال تنظیم ادبی مرکز کمراز کی کاوشوں کی بھرپور سراہنا کرتے ہوئے کہاکہ مرکز کی طرف سے کی گیی حالیہ پہل،جس کے تحت کشمیری زبان کو گوگل ٹرانسلیشن سروس میں شامل کرنے کیلئے عالمی سطح پر مہم شروع کی گیی ، کی زبردست سراہنا کرتے ہوئے اس کی بھرپور حمایت کا اعلان کیا۔انجمن کی سرکاری طور رجسٹریشن کا عمل کامیابی سے مکمل ہونے پر ممبران نے مسرت کا اظہار کیا‌ اس حوالے سے انجمن کے ایک فعال ممبر الیاس ارمان کا خاص طور سے شکریہ ادا کیا گیا جنہوں نے اس معاملے کو پایہ تکمیل تک پہنچانے میں زبردست کوشش کی۔اس موقع پر انجمن کے صدر غلام نبی شاکر نے انجمن کے سالانہ لایحہ عمل کی تفصیلات دیتے ہوئے کہا کہ آنے والے مہینوں میں کشمیریوں زبان کے فروغ کے حوالے سے ضلع کپواڑہ کے تمام تعلیمی اداروں میں جانکاری پروگرام منعقد کیے جاءیںگے۔اس کے علاوہ اپریل کے مہینے میں ایک شاندار تھیٹر کانفرنس منعقد کی جایے گی جس میں تھیٹر سے وابستہ مایہ ناز شخصیات کی عزت افزائی کی جائے گی۔ یہ بھی بتایا گیاکہ عنقریب کپواڑہ میں ایک شاندار ادبی کانفرنس منعقد کی جایےگی جس میں وادی کی تمام ادبی تنظیموں کو مدعو کیا جایےگا۔محفل کی دوسری نشست میں ایک محفل مشاعرہ منعقد ہؤا جس میں عبدالاحد حامی، ارشاد ابن مختار ،الیاس ارمان ،آفتاب طارق ، عادل طارق لولابی،فاروق سوگامی، احمد سجاد، جنید نجار، عامر مراد، صبا شبنم اور غلام نبی شاکر نے اپنا اپنا کلام سناکر حاضرین سے داد حاصل کی۔آخر پر انجمن کے دفتر پر بورڑ نصب کیا گیا ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.